news
English

ڈومیسٹک میں 3 سال سے اچھا پرفارم کررہا ہوں، سیاست نہیں آتی، احمدشہزاد  

چیئرمین پی سی بی کا میرٹ کی بات کرنا بہت اچھی چیز ہے، احمد شہزاد

ڈومیسٹک میں 3 سال سے اچھا پرفارم کررہا ہوں، سیاست نہیں آتی، احمدشہزاد  

قومی کرکٹ ٹیم کے سینئر کھلاڑی احمد شہزاد نے کہا ہے کہ تین سال سے ڈومیسٹک کرکٹ میں میری اچھی پرفارمنس رہی ہے مگر قومی ٹیم میں نام نہیں آیا، سیاست مجھے نہیں آتی۔،، 
لاہور میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے احمد شہزادنے قومی ٹیم میں واپسی کی خواہش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ڈھائی، تین سال سے مسلسل ڈومیسٹک کرکٹ کھیل رہا ہوں، ملک کے لیے میری پرفارمنسزسب کے سامنے ہیں لیکن قومی ٹیم اور پی ایس ایل میں میرانام نہیں آیا۔ 
انہوں نے کہا کہ میں نے محنت جاری رکھی اوررواں سیزن میں تومیری پرفارمنس بہت اچھی رہی، ڈومیسٹک کی پرفارمنس پرمیرا نام کیمپ میں بھی آیا اب امید کررہا ہوں کہ مجھے موقع ملے گا، جب آپ ایک بار کیمپ میں آجاتے ہیں تو پھرآپ 20 رکنی اسکواڈ کاحصہ بن جاتے ہیں۔ 
احمدشہزادنےامید ظاہرکی کہ انہیں مکمل موقع فراہم کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ قومی اسکواڈ میں واپسی کے لیےڈومیسٹک میں پرفارم کرنا پڑتا ہے جو میں کرچکا ہوں، اپنی پرفارمنس اورتجربے سے ملک کو فائدہ پہنچاناچاہتاہوں، ٹاپ آرڈرمیں ابھی بھی بہت کچھ ٹھیک ہونے والا ہے میں ہمیشہ ٹاپ آرڈرمیں ہی کھیلا ہوں، ہم اب بھی اسٹرائیک ریٹ، اٹیکنگ اور ماڈرن ڈے کرکٹ کی بات کرتے ہیں۔ 
انہوں نے کہا کہ مجھے امید ہے کہ ٹی 20میں نام آنے کے بعد مجھے آگے بھی کھیلنے کا موقع ملے گا، ڈومیسٹک ٹی 20 کے دوران چیف سلیکٹر وہاب ریاض سے رابطہ ہوا تھا، انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل میں نہیں ہوں گے تو آپ کی ڈومیسٹک کی پرفارمنس کو دیکھا جائے گا، پی ایس ایل کی ایک دوپرفارمنسزپرٹیم میں شامل کرنا کھلاڑی اورٹیم کے ساتھ زیادتی ہے۔ 
احمد شہزاد نے کہا کہ چیئرمین پی سی بی محسن نقوی کے لئے بہت چیلنجز ہیں وہ نگران وزیر اعلی کے طورپرمثبت کام کرچکے ہیں، چیئرمین کا میرٹ کی بات کرنا بہت اچھی چیز ہے۔
اپنی گفتگو کے آخر میں انہوں نے ایک سوال کا ذومعنی جواب دیتے ہوئے کہا کہ ’سیاست مجھے آتی نہیں، دل سے کام لیتا ہوں‘۔