news
English

آئی سی سی نے برطانوی کلب کرکٹرکو تاریخ کی دوسری طویل ترین سزاسنادی  

اس سے قبل آئی سی سی نے زمبابوے کے کرکٹ آفیشل راجن نیئر کو 2018 میں 20 سالہ پابندی کی سزا سنائی تھی۔ 

آئی سی سی نے برطانوی کلب کرکٹرکو تاریخ کی دوسری طویل ترین سزاسنادی  

آئی سی سی (انٹرنیشنل کرکٹ کونسل) نے برطانیہ میں مقیم کلب کرکٹر رضوان جاوید پر ساڑھے 17 سال کی پابندی عائد کردی۔
انٹرنیشنل کرکٹ کونسل کی جانب سے یہ اب تک سنائی گئی سزاؤں میں دوسری طویل ترین سزا ہے۔ اس سے قبل آئی سی سی نے زمبابوے کے کرکٹ آفیشل راجن نیئر کو 2018 میں 20 سال پابندی کی سزا سنائی تھی۔ 
دوسری جانب برطانیہ کے کلب کرکٹر رضوان جاوید اُن آٹھ کھلاڑیوں اور آفیشلز میں شامل تھے جن پر ستمبر 2023 میں آئی سی سی نے 2021 کی ابوظہبی ٹی 10 لیگ میں بدعنوانی کے الزامات عائد کیے تھے۔ 
ان افراد میں بنگلہ دیش کے بین الاقوامی کھلاڑی ناصر حسین بھی شامل تھے جو دو سالہ پابندی کی سزا بھگت رہے ہیں۔  
آئی سی سی نے کہا کہ رضوان جاوید الزامات کا جواب دینے میں ناکام رہے، اُن پر ایمریٹس کرکٹ بورڈ  کے اینٹی کرپشن کوڈ کی پانچ شقوں کی خلاف ورزی کے باعث پابندی عائد کی گئی ہے۔ 
آئی سی سی کے جنرل منیجر انٹیگریٹی، ایلکس مارشل نے کہا کہ رضوان جاوید کو دیگر ساتھی کرکٹرز کو بدعنوانی میں ملوث کرنے کی بار بار کوششوں کی وجہ سے طویل سزا دی گئی ہے۔ 
انہوں نے کہا کہ رضوان جاوید پر پابندی دوسرے بدعنوان کھلاڑیوں اور آفیشلز کے لیے ایک ٹھوس پیغام ہے جو کسی بھی سطح پر کرکٹ کو بدعنوانی کا نشانہ بنانے کی کوشش کررہے ہیں۔