news
English

رزاق اور وہاب کو سلیکشن کمیٹی سے ہٹانے پر شاہد آفریدی کا سخت ردعمل

شاہد آفریدی نے موجودہ کپتان بابر اعظم کو دیے گئے بے مثال مواقع کی اہمیت پر زور دیا۔

رزاق اور وہاب کو سلیکشن کمیٹی سے ہٹانے پر شاہد آفریدی کا سخت ردعمل

وہاب ریاض اور عبدالرزاق کی برطرفی پر قومی ٹیم کے سابق کپتان نے ناراضی کااظہارکرتےہوئے کہا ہے کہ یہ سرجری سمجھ سے باہر ہے۔'  
لیجنڈز لیگ ٹورنامنٹ میں شریک آل راؤنڈر نے بابراعظم کو اتنے مواقع ملنے پر حیرانی کا اظہارکیاہے۔
تفصیلات کے مطابق قومی ٹیم کے سابق کپتان شاہد آفریدی نے وہاب ریاض اور عبدالرزاق کو سلیکشن کمیٹی سے ہٹائے جانے پر حیرانی کا اظہار کرتے ہوئے اس فیصلے کو سمجھ سے بالاتر قراردےدیا۔ 
ورلڈ چیمپئین شپ آف لیجنڈز ٹورنامنٹ میں شریک پاکستانی ٹیم کے رکن شاہد آفریدی نے جنوبی افریقہ کیخلاف میچ کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں کسی کپتان اتنے مواقع نہیں ملے جتنے بابراعظم کو ملے، ورنہ ہماری روایت ہے کہ میگا ایونٹ میں ناقص فارم کے بعد کپتان پہلے گھر جاتا ہے۔ 
سلیکشن کمیٹی سے عبدالرزاق اور وہاب ریاض کی برطرفی پرسابق کرکٹر کا کہنا تھا کہ یہ اقدام تھا جس کو “سرجری” قراردیا گیا تھا، ایمانداری کے ساتھ کہنا چاہوں گا کہ یہ سرجری میری سمجھ سے باہر ہے۔،،  
سابق آل راؤنڈر نے کہا کہ میں نے اور مصباح اور یونس نے پاکستانی ٹیم کی قیادت کی لیکن اتنے مواقع ہمیں کبھی نہیں ملے، اتنا سب کچھ ملنے کے بعد بھی بابراعظم خود کو ثابت نہیں کرسکے۔،، 
پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا تھا کہ سابق کرکٹرز وہاب ریاض اور عبدالرزاق کو سلیکشن کمیٹی سے ہٹادیا گیا ہے، اب قومی ٹیم کے لئے اِن کی خدمات کی ضرورت نہیں۔ 
دونوں سابق کرکٹرز ٹی20 ورلڈکپ سمیت نیوزی لینڈ اور انگلینڈ دورے کے دوران مینز سلیکشن کمیٹی کے رکن تھے۔ 
دوسری جانب اعلامیے میں سلیکشن کمیٹی کے دیگر تین ارکان محمد یوسف، اسد شفیق اور بلال افضل کے مستقبل سے متعلق کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا ہے، جس پر سوالات اُٹھ رہے ہیں۔  
بورڈ کی جانب سے یہ فیصلہ ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب دونوں کرکٹرز لیجنڈز لیگ ٹورنامنٹ کھیلنے میں مصروف ہیں، اس ٹورنامنٹ میں پاکستانی ٹیم 5 میں 4 میچز جیت کر ٹاپ پوزیشن پر موجود ہے۔