news
English

شعیب ملک پاکستانی کرکٹ ٹیم کے حق میں بول پڑے

پے در پے شکستوں نے پاکستانی ٹیم کو آئی سی سی ٹیسٹ چیمپئن شپ میں ساتویں نمبر پر پہنچا دیا ہے۔   

شعیب ملک پاکستانی کرکٹ ٹیم کے حق میں بول پڑے

پاکستان ورلڈ کپ 2023 میں اپنے سفر کا آغاز 6 اکتوبر کو ہالینڈ کے خلاف حیدر آباد میں ہونے والے میچ سے کرے گا دوسری جانب پاکستان کے سابق ٹیسٹ کپتان شعیب ملک پاکستانی کرکٹ ٹیم کے حق میں بول پڑے۔ 
سندھ پریمیئر لیگ کی ڈرافٹنگ تقریب میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے شعیب ملک نے کہا کہ ورلڈ کپ کے دو وارم اَپ میچز میں ہمارے خلاف اگر 700 رنز بنے ہیں تو دیگر ٹیموں کے خلاف بھی اتنے ہی رنز اسکور ہوئے ہیں۔ 
انہوں نے کہا کہ پاکستان کی بدقسمتی ہے کہ اہم بولر نسیم شاہ موجود نہیں کیونکہ نسیم شاہ، حارث رؤف اور شاہین آفریدی کا کمبی نیشن بن چکا تھا۔ منجمنٹ کو چاہئے تھا کہ وہ دیگر بولرز کو بھی ایڈجسٹ ہونے کا موقع دیتی۔ 
شعیب ملک نے کہا کہ ہم سب کی پاکستانی ٹیم سے امیدیں جڑی ہوئی ہیں۔ کپتان بابر اعظم کو اعتماد دینے کی ضرورت ہے۔ بابر اعظم میگا ایونٹ میں ٹیم کی قیادت کررہے ہیں۔ 
گرین شرٹس کے سابق کپتان نے کہا پوری قوم دعاگو ہے کہ دنیائے کرکٹ کے سب سے بڑے میلے ورلڈ کپ میں پاکستان اچھا کارکردگی دکھائے۔ سعود شکیل کو وارم اپ میچ میں بالکل درست موقع دیا گیا، وہ ایک مرکزی بیٹر کے طور پر بہترین آپشن ہیں۔ 
انہوں نے مزید کہا کہ کسی بھی کھلاڑی کو یہ علم نہیں ہوتا کہ اسٹیڈیم میں تماشائیوں کی تعداد کتنی ہے، لیکن اہم مقابلوں میں ہر کھلاڑی پر دباؤ ہوتا ہے۔ ایسے حالات میں خود کو نارمل رکھنے کی ضرورت ہوتی ہے۔